منی لانڈرنگ معاملہ:NIAکی برق رفتارتحقیقات

ٹنل کے آرپارمتعددمقامات پرچھاپہ ماری
مزاحمتی لیڈروں وکارکنوں ،حمایتیوں اورکاروباری افرادکے گھروں اوردفاترمیں طویل تلاشی کارروائی

سرینگر؍۷؍ستمبر ؍منی لانڈرنگ معاملے کی چھان بین میں تیزی لاتے ہوئے قومی تفتیشی ایجنسی NIAنے گزشتہ24گھنٹوں کے دوران کشمیر،نئی دہلی اورگڑگاؤں ہریانہ میں لگ بھگ40مقامات پرچھاپے ڈالکرکروڑوں روپے نقدکے علاوہ لین دین اورمنقولہ وغیرمنقولہ جائیدادسے متعلق اہم ریکارڈودستاویزات،لیپ ٹاپ ، موبائیل فون اور دیگر آلات ضبط کئے ۔جمعرات کواین آئی اے کی ٹیموں نے سری نگر،بجبہاڑہ اورکپوارہ میں کئی سینئرمزاحمتی لیڈروں وکارکنوں سمیت10مشتبہ افرادکے گھروں اورکاروباری مراکزکی باریک بینی سے تلاشی لی ،اورمتعلقین سے کروڑوں روپے لین دین کے بارے میں پوچھ تاچھ کی گئی ۔خیال رہے این آئی اے کی ٹیموں نے بدھ کے روزکشمیراورکشمیرسے باہرلگ بھگ27مقامات پرکئی تاجروں کے گھروں وتجارتی مراکزمیں چھاپہ مارکارروائیوں کے دوران 2کروڑروپے سے زیادہ کی رقم ،اہم ریکارڈودستاویزات اورلیپ ٹاپ وغیرہ کی ضبطی عمل میں لائی تھی ۔غورطلب ہے کہ منی لانڈرنگ سے متعلق کیس درج کرنے کے بعداین آئی اے نے ماہ جولائی کے آخری ہفتے میں نصف درجن سے زیادہ مزاحمتی لیڈروں وذمہ داروں کوگرفتارکرلیاجبکہ اسکے بعداین آئی اے نے جموں میں سکھ فرقہ سے تعلق رکھنے والے ایک وکیل،معروف کشمیری تاجرظہوروٹالی اورمحمداسلم وانی کی گرفتاری بھی عمل میں لائی ۔معلوم ہواکہ قومی تفتیشی ایجنسی این آئی اے نے کشمیرمیں علیحدگی پسندانہ سرگرمیوں کیلئے مبینہ طوربیرون ممالک سے کی جارہی فنڈنگ سے جڑے کیس کی تحقیقات میں تیزی لاتے ہوئے مسلسل دوسرے روزبھی وادی میں کئی مقامات پرچھاپہ ڈالکرطویل تلاشی کارروائیاں عمل میں لائیں ۔معلوم ہواکہ این آئی اے کی ٹیم نے پولیس اورسی آرپی ایف اہلکاروں کی نگرانی میں جمعرات کوعلی الصبح جنوبی ضلع اسلام آبادکے بجبہاڑہ قصبہ میں حریت کانفرنس(گ) کے جنرل سیکرٹری حاجی غلام نبی سمجھی کے رہائشی مکان میں چھاپہ ڈالکریہاں طویل تلاشی کارروائی عمل میں لانے کیساتھ ساتھ پوچھ تاچھ بھی کی ۔مقامی لوگوں نے بتایاکہ جمعرات کوصبح کے وقت اچانک پولیس اور سی آرپی ایف اہلکاروں نے حاجی غلام نبی سمجھی کی رہائش گاہ کوچاروں اطراف سے محاصرے میں لیا،اوراس دوران این آئی اے کی ایک ٹیم حریت لیڈرکے گھرمیں داخل ہوئی ۔عینی شاہدین کے مطابق یہاں تلاشی کارروائی کئی گھنٹوں تک جاری رہی اوراس دوران فورسزکامحاصرہ بھی جاری رہاجبکہ مکان میں موجودکسی بھی فردخانہ کوباہرجانے کی اجازت نہیں دی گئی ۔تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکاکہ آیاحاجی غلام نبی سمجھی تلاشی کارروائی کے وقت گھرمیں موجودتھے کہ نہیں ،اوریہ بھی معلوم نہیں ہوسکاکہ این آئی اے کی ٹیم نے حریت(گ) سیکرٹری جنرل کی رہائش گاہ سے کسی چیزکی ضبطی عمل میں لائی کہ نہیں ۔اس دوران این آئی اے کی ایک اورٹیم نے پولیس وفورسزاہلکاروں کی موجودگی میں حریت (گ) کے ایک اورسینئرلیڈرومعروف شیعہ رہنماآغاسیدحسن کے رہائشی مکان واقع بڈگام میں بھی چھاپہ ڈالا۔مقامی لوگوں نے بتایاکہ جمعرات کوصبح کے وقت اچانک پولیس اور سی آرپی ایف اہلکاروں نے حاجی غلام نبی سمجھی کی رہائش گاہ کوچاروں اطراف سے محاصرے میں لیا،اوراس دوران این آئی اے کی ایک ٹیم حریت لیڈرکے گھرمیں داخل ہوئی ۔عینی شاہدین کے مطابق یہاں تلاشی کارروائی کئی گھنٹوں تک جاری رہی اوراس دوران فورسزکامحاصرہ بھی جاری رہاجبکہ مکان میں موجودکسی بھی فردخانہ کوباہرجانے کی اجازت نہیں دی گئی ۔تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکاکہ آیاآغاسیدحسن تلاشی کارروائی کے وقت گھرمیں موجودتھے کہ نہیں ،اوریہ بھی معلوم نہیں ہوسکاکہ این آئی اے کی ٹیم نے حریت(گ) کے سینئرلیڈر کی رہائش گاہ سے کسی چیزکی ضبطی عمل میں لائی کہ نہیں ۔معلوم ہواکہ این آئی اے کی ایک ٹیم نے محبوس مزاحمتی لیڈرشبیراحمدشاہ کی پارٹی فریڈم پارٹی کے ایک کارکن ضمیراحمدکے مکان واقع گلشن نگرنوگام سرینگرمیں بھی چھاپہ ڈالا،اوریہاں بھی کافی وقت تلاشی کارروائی عمل میں لائی گئی ۔تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکاکہ آیاضمیراحمد تلاشی کارروائی کے وقت گھرمیں موجودتھے کہ نہیں ،اوریہ بھی معلوم نہیں ہوسکاکہ این آئی اے کی ٹیم نے فریڈم پارٹی کے کارکن کی رہائش گاہ سے کسی چیزکی ضبطی عمل میں لائی کہ نہیں ۔ادھرقومی تفتیشی ایجنسی کی ایک ٹیم نے پولیس وفورسزاہلکاروں کے اشتراک سے بمنہ میں معروف مزاحمتی لیڈرشکیل احمدبخشی اورلبریشن فرنٹ کے سینئرلیڈرشوکت احمدبخشی کے رہائشی مکان میں بھی جمعرات کے روزاچانک چھاپہ ڈالا۔عینی شاہدین کے مطابق یہاں تلاشی کارروائی کئی گھنٹوں تک جاری رہی اوراس دوران فورسزکامحاصرہ بھی جاری رہاجبکہ مکان میں موجودکسی بھی فردخانہ کوباہرجانے کی اجازت نہیں دی گئی ۔تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکاکہ آیابخشی برادران تلاشی کارروائی کے وقت گھرمیں موجودتھے کہ نہیں ،اوریہ بھی معلوم نہیں ہوسکاکہ این آئی اے کی ٹیم نے تلاشی کارروائی کے دوان کسی چیزکی ضبطی عمل میں لائی کہ نہیں ۔دریں اثناء این آئی اے کی ایک اورٹیم نے سرحدی ضلع کپوارہ کے کرالہ پورہ علاقہ میں بھی ایک گھرمیں تلاشی کارروائی عمل میں لائی جبکہ اسی نوعیت کی کارروائی حیدرپورہ سرینگرمیں بھی عمل میں لائی گئی اوریہاں ایک چارٹرڈاکاؤنٹنٹ کے دفترواقع الحیدرکمپلیکس میں چھاپہ ڈالکرتلاشی کارروائی عمل میں لائی گئی ۔حیدرپورہ اورکرالہ پورہ کپوارہ میں طویل تلاشی کارروائی کے دوران منی لانڈرنگ سے متعلق چھان بین کی گئی ۔ادھرمعلوم ہواکہ این آئی اے کی ٹیموں نے جمعرات کووادی میں لگ بھگ دس مقامات پرچھاپے ڈالکرتلاشی کارروائیاں عمل میں لائیں۔خیال رہے این آئی اے کی ٹیموں نے بدھ کے روزکشمیراورکشمیرسے باہرلگ بھگ27مقامات پرکئی تاجروں کے گھروں وتجارتی مراکزمیں چھاپہ مارکارروائیوں کے دوران 2کروڑروپے سے زیادہ کی رقم ،اہم ریکارڈودستاویزات،لیپ ٹاپ موبائیل فون اور دیگر آلات وغیرہ کی ضبطی عمل میں لائی تھی ۔غورطلب ہے کہ منی لانڈرنگ سے متعلق کیس درج کرنے کے بعداین آئی اے نے ماہ جولائی کے آخری ہفتے میں نصف درجن سے زیادہ مزاحمتی لیڈروں وذمہ داروں کوگرفتارکرلیاجبکہ اسکے بعداین آئی اے نے جموں میں سکھ فرقہ سے تعلق رکھنے والے ایک وکیل،معروف کشمیری تاجرظہوروٹالی اورمحمداسلم وانی کی گرفتاری بھی عمل میں لائی ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *